غزلیں ۔۔۔ تابش صدیقی

وفا کا اعلیٰ نصاب رستے صعوبتوں کی کتاب رستے   ہیں سہل الفت کے رہرووں کو ہوں چاہے جتنے خراب رستے   جو عذر ڈھونڈو، تو خار ہر سو ارادہ ہو تو، گلاب رستے   چمک سے دھندلا گئی ہے منزل بنے ہوئے ہیں سراب رستے   رہِ عزیمت کے راہیوں کو گناہ مسکن، ثواب Read more about غزلیں ۔۔۔ تابش صدیقی[…]

غزلیں ۔۔۔ شمس خالد

قَلب وحشت سے بھر گیا شاید خواب آنکھوں میں مر گیا شاید   تیری نظروں سے کیا اُترنا تھا سب کے دل سے اُتر گیا شاید   رہگزر میں بڑی خَموشی ہے راہ رُو اپنے گھر گیا شاید   آئینے نے نظر جھُکالی ہے میری حالت سے ڈر گیا شاید   ایک الزامِ زیست تھا Read more about غزلیں ۔۔۔ شمس خالد[…]

غزلیں ۔۔۔ عبید الرحمن نیازی

اندر اندر سے یہی ایک خلش کھائے مجھے ایک دن وہ کہیں دشمن نہ سمجھ جائے مجھے   صاف پانی بھی نہیں مفت میں ملتا اب تو کیسے ممکن ہے کہ تو مفت میں مل جائے مجھے   یاد آؤں میں کسی روز اسے شدّت سے اور پھر نرم سی پلکوں سے وہ برسائے مجھے Read more about غزلیں ۔۔۔ عبید الرحمن نیازی[…]

غزلیں ۔۔۔ سلیمان جاذب

برسوں کا شناسا بھی شناسا نہیں لگتا کچھ بھی دمِ ہجراں مجھے اچھا نہیں لگتا   کر لوں میں یقیں کیسے کہ بدلہ نہیں کچھ بھی لہجہ ہی اگر آپ کا لہجہ نہیں لگتا   اک تیرے نہ ہونے سے ہوا حال یہ دل کا بستی میں کوئی شخص بھی اپنا نہیں لگتا   کاغذ Read more about غزلیں ۔۔۔ سلیمان جاذب[…]

غزلیں ۔۔۔۔ طارق بٹ

وجہِ بے گانگی بتاتے نئیں جو ہمارے ہیں اور ہمارے نئیں   آپ کیا دوریاں مٹائیں گے راستے ملنے کے بناتے نئیں   چلیے منزل شناس ہم نہ ہوئے خیر سے آپ بھی تو پہنچے نئیں   ہم نے ہر لمحہ دل اُسارے ہیں کر کے پیماں کسی سے توڑے نئیں   اک تمھیں اپنی Read more about غزلیں ۔۔۔۔ طارق بٹ[…]

غزلیں ۔۔۔ فریاد آزر

آزما کر عالمِ ابلیس کے حربے جدید ہو گئے قابض مری صدیوں پہ کچھ لمحے جدید   دفن کر دیتا تھا پیدا ہوتے ہی عہدِ قدیم رحم ہی میں مار دیتا ہے اسے دورِ جدید   ننھا کمپیوٹر! قلم، کاپی، کتابوں کی جگہ اِس قدر سوچا نہ تھا ہو جائیں گے بستے جدید   ہو Read more about غزلیں ۔۔۔ فریاد آزر[…]

غزلیں ۔۔۔ ڈاکٹر رؤف خیر

تمھیں تو چاہیئے بس مختصر در و دیوار اٹھاؤ مت در و دیوار پر در و دیوار   بدلتے رہتے ہیں اہل ہنر در و دیوار بنا کے رکھتے ہیں دیوار و در در و دیوار   ترے بغیر ہوئے بے قمر در و دیوار تو پھر تڑپتے رہے رات بھر در و دیوار   Read more about غزلیں ۔۔۔ ڈاکٹر رؤف خیر[…]

غزلیں ۔۔۔ مظفر حنفی

ہمارے گھر پہ کبھی سائبان پڑتا نہیں یہ وہ زمیں ہے جہاں آسمان پڑتا نہیں   پڑاؤ کرتے چلے راہ میں تو چلنا کیا سفر ہی کیا ہے اگر ہفت خوان پڑتا نہیں   بجھانی ہو گی ہمیں خود ہی اپنے گھر کی آگ کہیں سے آئے گی امداد، جان پڑتا نہیں   مزے میں Read more about غزلیں ۔۔۔ مظفر حنفی[…]

غزلیں ۔۔۔ محمد صابر

نہاں کے پردۂ پیچاک کو نہیں مانے فریب دیدۂ ادراک کو نہیں مانے   یہ بد گمان جہنم میں ڈال دوں گا میں لعین صاحبِ املاک کو نہیں مانے   کسی بھی آنکھ نے دیکھا ہوا نہیں سمجھا یہ لوگ بر سرِ افلاک کو نہیں مانے   وجود غیب کو آدم کبھی نہیں مانا سو Read more about غزلیں ۔۔۔ محمد صابر[…]