چودھویں رات کا چاند ۔۔۔ محمد عظیم الدین

چودھویں کی رات تھی اور آسمان پر چمکتا ہوا چاند اسے دیکھ رہا تھا اور وہ زمین سے چاند کو۔ اس کے لیے یہ منظر نیا نہیں تھا لیکن چاند کے لیے شاید یہ منظر کچھ عجیب بھی تھا اور نیا بھی۔ اب سے پہلے چاند ہر مہینے کی چودھویں رات کو چار چمکتی آنکھیں Read more about چودھویں رات کا چاند ۔۔۔ محمد عظیم الدین[…]

بھُوکے ۔۔۔ حنیف سیّد

بھُوکے تو دونوں ہی تھے، یہ کہنا مشکل تھا کہ زیادہ بھُوکا تھا کون۔۔ ۔۔؟ وہ، جو پاکھڑ کی جڑ سے ٹِکا، ستر سال کا بد شکل، کالا کلوٹا، چار فٹا، لنگڑا، زنانا اور اَگھوری، ہُلّا۔ یا وہ جو جون کی چلچلاتی دھوپ میں اپنے گھر کی کچی دیوار پر آدھے سے کچھ کم باہر Read more about بھُوکے ۔۔۔ حنیف سیّد[…]

کیوں کہ میں نے اب سوچنا شروع کر دیا ہے ۔۔۔ عامر صدیقی

سوچنا شاید سب سے مشکل کام ہے، یہی وجہ ہے کہ کم ہی اس کی طرف راغب ہوتے ہیں۔۔۔ میں نے بھی آج سے سوچنا شروع کر دیا ہے، اب چاہے آپ ہوں یا کوئی دوسرا، میرے سوچنے پر اب کوئی بھی پابندی نہیں لگا سکتا۔ ایک ایسا وقت ضرور آئے گا جب سبھی سوچنے Read more about کیوں کہ میں نے اب سوچنا شروع کر دیا ہے ۔۔۔ عامر صدیقی[…]

چھُٹّی ۔۔۔ محمد علیم اسماعیل

وکیل صاحب تمھارے کمرے سے کھانسی کی وہ آوازیں اب آتی نہیں لیکن درد سے کراہتی تمھاری آہیں آج بھی ارد گرد محسوس ہوتی ہیں، جو رہ رہ کر دماغ میں گونجتی رہتی ہیں۔ اسپتال سے چھٹی مل جانے پر چھوٹا بھائی تمھیں لانے گیا تھا، پر اب وہ تمھاری لاش لے کر آ رہا Read more about چھُٹّی ۔۔۔ محمد علیم اسماعیل[…]

بزدل۔۔۔ راجہ یوسف

’’یہ محبت کا جنون ہے فرہاد۔۔۔ میری محبت کا جنون۔ ایسی محبت تمہیں کسی اور سے کہاں ملے گی۔۔۔ کون ہے جو اس طرح سے تیرا راستہ روکے۔۔۔ تیرا ہاتھ اپنے ہاتھ میں لے کر سر راہ اتنا کچھ سوچے کہ بات سوچ کی انتہا تک جا پہنچے۔۔۔ اور وہ کر گزرے کہ سوچ بھی Read more about بزدل۔۔۔ راجہ یوسف[…]

ایک دن کی بات ۔۔۔ نور الحسنین

اختر علی کے سینے میں عجیب سی چمک اُٹھی اور وہ ایک دم نیند سے بیدار ہو گئے اور اُنھوں نے اپنے دونوں ہاتھوں سے سینے کے بائیں حصے کو پکڑ لیا، لیکن تکلیف کم نہیں ہوئی، پھر اُنھیں بے چینی سی ہونے لگی۔ بازو ہی اُن کی بیوی گہری نیند سو رہی تھی۔ وہ Read more about ایک دن کی بات ۔۔۔ نور الحسنین[…]

تصویرِ تختِ سلیمانی ۔۔۔ غضنفر

  معمر شخص جس کا چہرہ، سر کے بال، جسم کی جلد، بھنویں، لباس سبھی سفید تھے اور جس کی آنکھیں رات ڈھلے تک بھی بند نہیں ہوتی تھیں اور صبح وقت سے پہلے کھل جاتی تھیں، کی نظریں حسبِ معمول تصویر تختِ سلیمانی پر مرکوز تھیں۔ وہ تصویر سامنے کی دیوار پر عین دروازے Read more about تصویرِ تختِ سلیمانی ۔۔۔ غضنفر[…]

خوف گنبد میں روشن آنکھیں ۔۔۔ شائستہ فاخری

  ’’سورج طلوع ہوتے ہی اس کی پہلی کرن کے ساتھ اس بد چلن کو سنگسار کر دیا جائے۔ جو جتنے پتھر اس پر پھینکے گا اس انسان کے اتنے ہی گناہ معاف ہوں گے۔‘‘ سرغنہ کے اس فرمان کے جاری ہوتے ہی بھیڑ نے اپنے گناہوں کی معافی کے لئے چھوٹے بڑے پتھروں کو Read more about خوف گنبد میں روشن آنکھیں ۔۔۔ شائستہ فاخری[…]

نرم لہجے کا فسوں ۔۔۔ فیروز عابد

  ’’عجیب سناٹا ہے‘‘ ’’کہاں پھنس گیا‘‘ ’’کیا ہوا۔۔۔۔؟‘‘ ’’یہ کیسی خاموشی ہے، ابھی رات اتری بھی نہیں۔۔ یہ کیسا گاؤں ہے۔۔۔۔؟‘‘ ’’سناٹا ہے۔۔۔۔ تم کیا کہہ رہے ہو۔ کیسا سناٹا، کیسی خاموشی۔۔۔۔۔؟‘‘ دیکھو گھروں کے کواڑ بند ہیں۔۔۔۔ دھول سے اَٹے تنگ راستے ہیں۔۔ ‘‘ ’’تم ابھی سے گھبرا گئے۔۔۔۔ پورے گاؤں کے سروے Read more about نرم لہجے کا فسوں ۔۔۔ فیروز عابد[…]

لذّت ۔۔۔ ایم مبین

  بھولا کے اسٹال پر اس دن معمول سے زیادہ بھیڑ تھی۔ اسے بھولا کے اسٹال پر بھیڑ دیکھ کر الجھن سی ہوئی۔ اس نے اپنے کلائی میں بندھی قیمتی گھڑی دیکھی اور ذہن میں حساب لگانے لگا کہ بھولاسے پاؤ بھاجی لے کر کھانے میں اسے کتنا وقت لگے گا اور اس کے پاس Read more about لذّت ۔۔۔ ایم مبین[…]