علامہ اقبال کی حمایت میں ۔۔۔ ڈاکٹر رؤف خیر

علامہ اقبالؔ شعر و ادب میں ہمالہ پہاڑ کی طرح عظیم الشان ہیں۔ غیر مسطح زمین کے بعض بے حیثیت لنگڑے لولے اُن پر چڑھ دوڑنے کی کوشش کرتے ہیں تو ہنسی آتی ہے۔ ایمان کے بعض مدعی علامہ اقبال کے ایمان و اسلام پر سوال اٹھاتے ہیں تو کیا اللہ تعالیٰ نے انھیں خدائی Read more about علامہ اقبال کی حمایت میں ۔۔۔ ڈاکٹر رؤف خیر[…]

گیان چند جین کی مکتوب نگاری ۔۔۔ پروفیسر مرزا خلیل احمد بیگ

مکتوباتی ادب غیر افسانوی ادب میں ایک امتیازی حیثیت رکھتا ہے۔  ہندوستان میں فارسی کے زوال کے بعد اردو میں خطوط لکھنے کا رواج عام ہوا، اور مشاہیرِ ادب کے خطوط کے مجموعے بھی شائع ہونا شروع ہوئے۔ اس طرح ہم دیکھتے ہیں کہ اردو میں مکتوباتی ادب کی تاریخ تقریباً دو سو سال پرانی Read more about گیان چند جین کی مکتوب نگاری ۔۔۔ پروفیسر مرزا خلیل احمد بیگ[…]

جون ایلیاء اچھا شاعر ہے بڑا شاعر نہیں ہے ۔۔۔ فرحت عباس شاہ

میرے اس مضمون میں نوجوانوں کو با وقار، با شعور، با ہمت اور بہادر دیکھنے کی تمنا رکھنے والے عظیم المرتبت شاعر علامہ اقبال کی فکر اور نظرئیے کے توڑ کے طور پر بڑا شاعر بنا کر پیش کیے جانے والے، رائیگاں، مایوس، برباد اور ناکام جون ایلیاء کے موضوع پر بات مرکزی ہونے کے Read more about جون ایلیاء اچھا شاعر ہے بڑا شاعر نہیں ہے ۔۔۔ فرحت عباس شاہ[…]

رضا براہینی: ایران کے بائیں بازو کے مابعد جدید شاعر، نقاد ناول نگار اور سیاسی مزاحمت کار ۔۔۔ احمد سہیل

رضا براہینی {Reza Baraheni}  1935  میں تبریز میں پیدا ہوئے۔  22 سال کی عمر میں انہوں نے تبریز یونیورسٹی سے انگریزی زبان اور ادب میں بیچلر کی ڈگری حاصل کی۔  پھر، وہ ترکی گئے اور پی ایچ ڈی کرنے کے بعد ایران واپس آئے۔  اپنے شعبے میں ڈگری حاصل کی اور یونیورسٹی میں پڑھانا شروع Read more about رضا براہینی: ایران کے بائیں بازو کے مابعد جدید شاعر، نقاد ناول نگار اور سیاسی مزاحمت کار ۔۔۔ احمد سہیل[…]

مرزا غالب کا سفرِ کلکتہ ۔۔۔ طارق محمود مرزا

بر صغیر کے عظیم شاعر مرزا اسد اللہ خان غالب ہمہ گیر شخصیت کے مالک تھے۔ اپنے زمانے کے مروّجہ علوم پر اُنھیں مکمل عبور حاصل تھا۔ تاہم ان کی وجہ شہرت شاعری تھی جو دو صدیاں گزرنے کے بعد بھی کم نہیں ہوئی۔ شاعری کے لیے اُنھوں نے اُردو اور فارسی دونوں کو ذریعہ Read more about مرزا غالب کا سفرِ کلکتہ ۔۔۔ طارق محمود مرزا[…]

اختر انصاری دہلوی: جینے کی جد و جہد میں جی سے گزر گئے ۔۔۔ ڈاکٹر غلام شبیر رانا

گردِشِ مدام اور پیہم شکستِ دِل کے نتیجے میں حساس تخلیق کار اضطراب اور اضمحلال کا شکار ہو جاتا ہے۔ جب اُس کی کوئی اُمید بر نہ آئے اور نہ ہی اصلاح احوال کی کوئی صورت دکھائی دے تو زندگی ایک کرب، اذیت اور عقوبت کی صورت اختیار کر لیتی ہے۔ اختر انصاری دہلوی کی Read more about اختر انصاری دہلوی: جینے کی جد و جہد میں جی سے گزر گئے ۔۔۔ ڈاکٹر غلام شبیر رانا[…]

فیض کی نظم ’’دریچہ‘‘ کا ساختیاتی جائزہ ۔۔۔ ڈاکٹر محمد خرم یاسین

ساختیات (Structuralism)، زبان کی ساخت کا علم ہے۔ اس میں زبان کے ساختیاتی اجزا، ان کے باہمی تعلق اور وجود سے بحث کی جاتی ہے۔ ساختیات کا آغاز ماہر لسانیات ساسئیر کے ان دروس سے ہوتا ہے جنھیں ان کی وفات کے بعد ان کے شاگردوں نے کتابی شکل میں شائع کروایا۔ اس سے زبان Read more about فیض کی نظم ’’دریچہ‘‘ کا ساختیاتی جائزہ ۔۔۔ ڈاکٹر محمد خرم یاسین[…]

مشتاق دربھنگوی کی یاد میں ۔۔۔ ڈاکٹر عطا عابدی

مشتاقؔ دربھنگوی سے میری ملاقات محلہ املی گھاٹ (دربھنگہ) میں ہوئی تھی، جہاں میرا قیام ہوا کرتا تھا۔ یہ غالباً 1982-83ء کی بات ہے۔ اُنہوں نے اپنے شعری مجموعہ ’’غمِ جاناں‘‘ سے نوازا۔ ’غمِ جاناں‘ کی شاعری غمِ جاناں سے عبارت تھی۔ اُس وقت اُن کی نوجوانی کا عالم تھا، میں خود بھی طفلِ مکتب Read more about مشتاق دربھنگوی کی یاد میں ۔۔۔ ڈاکٹر عطا عابدی[…]

مصحف اقبال توصیفی کی شاعری: ایک منجمد پُر شور دریا ۔۔۔ اسلم عمادی

اُردو کی نئی شاعری اِس معاملے میں بہت خوش بخت ہے کہ اس کے دامن میں کئی نمائندہ اور قابل ذکر شاعر اپنے اپنے منفرد لب و لہجہ (زبان، ڈکشن اور فکر) کے ساتھ رونق پذیر ہیں۔ یہ شاعر ہندوستان، پاکستان اور دوسرے ممالک میں رہتے ہوئے بھی ایک حد تک اسی فکری لہر سے Read more about مصحف اقبال توصیفی کی شاعری: ایک منجمد پُر شور دریا ۔۔۔ اسلم عمادی[…]

امتیاز علی خان عرشی: اردو کے متنی تحقیق اور انتقادات کے بنیاد گذار اور جدید تفہیمی ماہر غالبیات ۔۔۔ احمد سہیل

شان نزول ستر کی دہائی میں جب میں نے جدید ادبی نظریات اور بالخصوص ساختیات اور اس کے اطلاقی اور عملیاتی پہلوں پر کام کرنا شروع کیا تو یہ کرید بھی ہوئی کہ اردو میں ساخیتاتی لسانی اور ادبی نظرئیے میں کن مثالوں کے ساتھ اس نظرئیے اور مناجیات کا اطلاق کیا جائے؟ پہلے تو Read more about امتیاز علی خان عرشی: اردو کے متنی تحقیق اور انتقادات کے بنیاد گذار اور جدید تفہیمی ماہر غالبیات ۔۔۔ احمد سہیل[…]