تکیہ کلام: چاہیے ۔۔۔ ڈاکٹر غلام شبیر رانا

  اِس حیات و کائنات کے دشتِ بلا پر مارچ 2020ء سے کورونا وائرس (Coronavirus: COVID-19) کا آسیب منڈلانے لگا۔ معمولات زندگی کی کایا پلٹ گئی ہے۔ بڑے بڑے طاقت ور ممالک سے بھی امداد کی التجا کی جا رہی ہے۔ اپنے خالق کو نہ پہچاننے والے بھی یاس و ہراس کے عالم میں ’ہل Read more about تکیہ کلام: چاہیے ۔۔۔ ڈاکٹر غلام شبیر رانا[…]

دوسرا پہیا ۔۔۔ قیصر شہزاد ساقیؔ

عنوان سے آپ کو لگ رہا ہو گا کہ گول گول پہیے کا صراط مستقیم سفر بیان ہوا چاہتا ہے مگر ایسی کوئی بات نہیں یہ صرف آپ کی تاریخی دلچسپی کا نتیجہ ہے جو کہ مجھے ادباء کی آمد و رخصت کے سن یاد کر کر کے بالکل نہیں۔ یہ منطقی لوگوں کی کیا Read more about دوسرا پہیا ۔۔۔ قیصر شہزاد ساقیؔ[…]

ووٹ کا ویٹ ۔۔۔ نسترن احسن فتیحی

آپ سوچ رہے ہوں گے۔ ۔ ۔ یہ کیا بات ہوئی !۔ ۔ ۔ ’’ووٹ کا ویٹ‘‘۔ آخر یہ کیا ہے۔ ۔ ۔ ؟ مضمون ہے۔ ۔ ۔ ؟ انشائیہ ہے ؟ افسانہ ہے ؟ اب یہ جو کچھ بھی ہے، ہے تو اردو میں ہی، تو بھلا انگریزی کے اس لفظ ’ ویٹ‘ کو Read more about ووٹ کا ویٹ ۔۔۔ نسترن احسن فتیحی[…]

ووٹ کا ویٹ ۔۔۔ نسترن احسن فتیحی

آپ سوچ رہے ہوں گے۔ ۔ ۔ یہ کیا بات ہوئی !۔ ۔ ۔ ’’ ووٹ کا ویٹ‘‘۔ آخر یہ کیا ہے۔ ۔ ۔؟ مضمون ہے۔ ۔ ۔؟ انشائیہ ہے؟ افسانہ ہے؟ اب یہ جو کچھ بھی ہے، ہے تو اردو میں ہی، تو بھلا انگریزی کے اس لفظ ’ ویٹ‘ کو یہاں گھسیٹ لانے Read more about ووٹ کا ویٹ ۔۔۔ نسترن احسن فتیحی[…]

ایک سوال۔۔۔ نسترن احسن فتیحی

کل میری لڑائی ہو گئی، لڑائی بھی کس سے دودھ والے سے۔ یہ سن کر آپ لوگ یہ مت سوچئے گا کہ میں ایک لڑاکا قسم کی گھریلو عورت ہوں۔ قصہ دراصل یہ ہے کہ یہ شخص جو اپنے گاؤں ( جو یہاں سے دس بارہ کیلو میٹر دور ہے )سے آ کر ہمارے شہر Read more about ایک سوال۔۔۔ نسترن احسن فتیحی[…]

ایک سوال ۔۔۔ نسترن احسن فتیحی

  کل میری لڑائی ہو گئی، لڑائی بھی کس سے دودھ والے سے۔ یہ سن کر آپ لوگ یہ مت سوچئے گا کہ میں ایک لڑاکا قسم کی گھریلو عورت ہوں ۔ قصہ دراصل یہ ہے کہ یہ شخص جو اپنے گاؤں ( جو یہاں سے دس بارہ کیلو میٹر دور ہے )سے آ کر Read more about ایک سوال ۔۔۔ نسترن احسن فتیحی[…]

ادب برائے ریڈیو ۔۔۔ محمد اسد اللہ

  ادب اور ریڈیو کا تعلق ریڈیو سے بھی زیادہ پرانا ہے۔ یہاں ریڈیو سے مراد ہمارا وہ پرانا ریڈیو ہرگز نہیں جو جنگلو ریڈیو میکینک کی دکان میں جلاوطنی کے پانچ سال گزار کر لوٹا ہے اور اب حشرات الارض کا بسیرا ہے۔ جس میں ایک ہی مقام پر دوسٹیشنوں کی جدید و قدیم Read more about ادب برائے ریڈیو ۔۔۔ محمد اسد اللہ[…]

ہمارے دفتر کی کرسیاں ۔ ۔ ۔ عمیر محمود

  شاید آپ کو یہ جان کر حیرانی ہو، ہمارے دفتر میں کرسی کو رسی کے ساتھ میز سے باندھا جانے لگا ہے۔ اور جب سے یہ چلن نکلا ہے، ہمیں کرسی اور کتے میں کوئی فرق نظر نہیں آتا۔ لیکن نوبت یہاں تک پہنچی کیوں ؟ یہ کہانی آٹھ سال پہلے شروع ہوتی ہے۔ Read more about ہمارے دفتر کی کرسیاں ۔ ۔ ۔ عمیر محمود[…]

نظمیں۔۔۔ ستیہ پال آنند

…………………………………………… پاؤں پاؤں چلتے آؤ …………………………………………… پرسوں نرسوں سوچتا تھا بطنِ فردا میں کوئی دن اُخروی ایسا بھی ہو گا جس میں ما معنیٰ مرا ماضی پلٹ کر ساعتِ امروز ہو گا؟ اب پس ِپردہ بالآخر حال، ماضی اور مستقبل اکٹھے ہو گئے ہیں تو مجھے کہنے میں قطعاً کوئی پیش و پس نہیں ہے Read more about نظمیں۔۔۔ ستیہ پال آنند[…]

کرائے کے لئے خالی ہے ۔۔۔ جاوید نہال حشمی

آپ سوچ رہے ہوں گے کہ ادبی تخلیق کے لئے اشتہاری عنوان کی کیا ضرورت تھی(حالانکہ ادب میں اشتہار بازی کوئی نئی بات نہیں!)۔ لیکن جب تخلیقی عمل کاروباری صورت اختیار کر لے تو اشتہار فطری طور پر لازمی ہو جاتا ہے۔میری مراد ادبی تخلیق سے بالکل نہیں ہے جیسا کہ آپ سوچ رہے ہیں۔میرا Read more about کرائے کے لئے خالی ہے ۔۔۔ جاوید نہال حشمی[…]