اکتوبر 3, 2013

تازہ شمارہ

مجھے کہنا ہے کچھ ۔۔۔۔۔

ہندوستان میں ایک نئے ہندوستان کی تعمیر کی جا رہی ہے، اگر واقعی یہ نیا ہندوستان ہم سب کے خوابوں کا ہندوستان ہو تو یہ بڑی خوش آئند بات ہے۔ لیکن اگر یہ محض قوم مخصوص کے خوابوں کا ہندوستان ہو، جس کا قوی شک ہے، تو یہ بر صغیر کے لوگوں کی بد قسمتی Read more about مجھے کہنا ہے کچھ ۔۔۔۔۔[...]

حمد ۔۔۔ محمد ذیشان نصر

  وہ حسنِ حقیقت جو سرِ عرشِ بریں ہے مستور وہی ذات رگِ جاں سے قریں ہے   ہر چیز میں ہے جلوہ فگن ذات اسی کی ظاہر میں اگرچہ کہیں موجود نہیں ہے   تسبیح کناں ارض و سما جنّ و ملائک سجدے میں جھکی عجز سے ہر ایک جبیں ہے   آفاق میں Read more about حمد ۔۔۔ محمد ذیشان نصر[...]

نعت رسول پاک ۔۔۔ نسیم سحر

  کیسا بھرا ہوا مرا دامانِ نعت ہے عشقِ نبی مرا سر و سامانِ نعت ہے   سردارنعت گویاں ہے، سلطان نعت ہے تاریخ میں بس ایک ہی حسانِ نعت یے   موضوع بھی وہی ہے، وہی جانِ نعت ہے وہ حاصلِ کلام ہی عنوانِ نعت ہے   رکھا ہوا جہاں مرا دیوانِ نعت ہے Read more about نعت رسول پاک ۔۔۔ نسیم سحر[...]

مثنوی خواب و خیال ۔۔۔ میر تقی میرؔ

  خوشا حال اس کا جو معدوم ہے کہ احوال اپنا تو معلوم ہے   رہیں جان غم ناک کو کاہشیں گئیں دل سے نومید سو خواہشیں   زمانے نے رکھا مجھے متصل پراگندہ روزی پراگندہ دل   گئی کب پریشانی روزگار رہا میں تو ہم طالع زلفِ یار   وطن میں نہ اک صبح Read more about مثنوی خواب و خیال ۔۔۔ میر تقی میرؔ[...]

معاشرہ عبوری اور تشکیلی دور سے گذر رہا ہے ۔۔۔ جمیل جالبی (انٹرویو)

طاہر مسعود: ڈاکٹر صاحب! آج آپ جس مقام پر ہیں، اس کے پیچھے آپ کا مطالعہ، محنت اور ڈسپلن کارفرما ہے۔ آپ اپنے بارے میں ہمیں تفصیل سے بتائیں۔ اپنے زمانۂ طالب علمی کے بارے میں، ان موضوعات اور ان ادیبوں کے بارے میں جنھیں آپ نے پڑھا۔ ان دوستوں اور شہروں کے متعلق جن Read more about معاشرہ عبوری اور تشکیلی دور سے گذر رہا ہے ۔۔۔ جمیل جالبی (انٹرویو)[...]

بچوں کے جمیل جالبی —– عطا محمد تبسم

بچوں کا ایک اور ادیب رخصت ہو گیا۔ اردو کے بڑے لکھنے والوں میں جمیل جالبی ایسے ادیب تھے، جو بچوں کے لیے بھی وقت نکال کر کچھ نہ کچھ لکھتے رہتے تھے۔ نونہال کے مدیر مسعود احمد برکاتی جو خود بھی بچوں کے بہت بڑے ادیب تھے، اور اپنے آخری وقت تک بچوں کا Read more about بچوں کے جمیل جالبی —– عطا محمد تبسم[...]

انور سجاد۔۔ ایک مصاحبہ ۔۔۔ انور سین رائے

  انور سجاد کون ہے؟ ________________   سوال: کوئی اگر آپ ہی سے آ کر پوچھ لے کہ یہ انور سجاد کون ہے تو آپ کیا کہیں گے؟ انور سجاد: اُسی کی تلاش میں ہوں۔ (قہقہہ) سوال: اب تک آپ نے اسے کتنا جانا ہے؟ انور سجاد: نام جیسے کہ آپ نے کہا ہے: انور Read more about انور سجاد۔۔ ایک مصاحبہ ۔۔۔ انور سین رائے[...]

محبت کی داستان ۔۔۔ انور سجاد

آسمان کی طرف جاتی سیڑھیاں، لاتعداد سیڑھیاں جن کے آخر میں عالیشان محل چمکتے سورج میں کلچرڈ موتی ہے وہ کہ جس کے پھیپھڑے بانجھ، شہر کے دھوئیں، سرطانی کھیتوں کی دھول سے ضیق النفس، جس کی زبان اور آنکھوں میں کتابوں کے چاٹے ہوئے کانٹے، وہ کہ جس کے جسم کی کھال اس کا Read more about محبت کی داستان ۔۔۔ انور سجاد[...]

گائے ۔۔۔ انور سجاد

ایک روز انہوں نے مل کر فیصلہ کیا تھا کہ اب گائے کو بوچڑ خانے میں دے ہی دیا جائے۔ اب اس کا دھیلا نہیں ملنا۔ ان میں سے ایک نے کہا تھا۔ ان مٹھی بھر ہڈیوں کو کون خریدے گا۔ لیکن بابا مجھے اب بھی یقین ہے۔ اگر اس کا علاج باقاعدگی سے۔ چپ Read more about گائے ۔۔۔ انور سجاد[...]

”بے ساختہ“ کا شاعر اکبر معصوم ۔۔۔ سعود عثمانی

ستاروں بھرے آسمان پر کوئی ستارہ غیر معمولی روشن ہوتا ہے .اکبر معصوم شعر کی دنیا کا ایک ایسا ہی ستارہ ہے۔ کل اکبر معصوم کا تازہ شعری مجموعہ “بے ساختہ”ملا اور طویل مدت کے بعد فون پر بھی گفتگو رہی.میری خوش قسمتی کہ وہ بھی اسی طرح مجھ سے محبت کرتے ہیں جیسے مجھے Read more about ”بے ساختہ“ کا شاعر اکبر معصوم ۔۔۔ سعود عثمانی[...]

غزلیں ۔۔۔ اکبر معصوم

  عشق کے بعد ہنر کیا کرتے کچھ بھی کر لیتے،مگر کیا کرتے   کیا سناتے تجھے اپنا احوال اب تجھے تیری خبر کیا کرتے   ہم کہ خود بیت گئے اوروں پر ہم بھلا تجھ کو بسر کیا کرتے   ہم جو نغمہ تھے نہ نالہ اے دوست تجھ پہ کرتے تو اثر کیا Read more about غزلیں ۔۔۔ اکبر معصوم[...]

حیدرآباد جو کل تھا۔۔۔ پروفیسر یوسف سرمست

(محبوب خان اصغر نے چار سال قبل روزنامہ سیاست حیدر آباد کے لیے ’حیدر آباد جو کل تھا‘ کے موضوع پر پروفیسر یوسف سرمست سے یہ تحریر حاصل کی تھی جو  اخبار میں شائع ہوئی تھی، اور ’سیاست‘ کے تشکر کے ساتھ یہاں بھی شامل کی جا رہی ہے)   میرا نام سید یوسف شریف Read more about حیدرآباد جو کل تھا۔۔۔ پروفیسر یوسف سرمست[...]

گُریز ۔۔۔ فرزانہ خجندی (تاجکستان)/ ناہیدؔ وِرک

لعنت اس بیمار معاشرے پر جہاں سائے اپنی قامت پر ناز کرتے ہیں۔ سورج کی عدم موجودگی کا بھید کسی پر نہیں کُھلتا ہے۔ کوئی نہیں جانتا ہے کہ یہ چمک دمک محض سَحَر ہونے کا ڈھونگ ہے۔ گرگٹ کا روپ دھارے ہوئے یہ دوغلے لوگ ہیں جن کی باتوں میں معنی کی عدم موجودگی Read more about گُریز ۔۔۔ فرزانہ خجندی (تاجکستان)/ ناہیدؔ وِرک[...]

اندھیروں کی سرحد پر ۔۔۔ مہران ملاح (سندھی)/ دیوی ناگرانی

آخر میں اس کی پرواہ کیوں کرتی ہوں؟ جب میں نے ہی اسے دھتکار دیا ہے، تو پھر اس کے خیال آ کر کیوں میرے دل کا دروازہ کھٹکھٹاتے ہیں؟ اس کا اپنا مسئلہ ہے، جب رابطہ ہوگا تو اس کی مدد کروں گی۔ میں کیوں خود کو پریشان کروں؟ پر مجھے ایسا کیوں لگ Read more about اندھیروں کی سرحد پر ۔۔۔ مہران ملاح (سندھی)/ دیوی ناگرانی[...]

سفر عشق, قسط ۔ ۲۔۔۔ طارق محمود مرزا

  مدینہ آمد   مدینہ منورہ کے ایئرپورٹ پر ہمارا جہاز کھڑا تھا۔ تھوڑی دیر میں ہم خاکِ یثرب پر قدم رکھنے والے تھے۔ اس وقت میرے جو جذبات تھے انہیں بیان کرنا مشکل ہے۔ اس شہر کی خاک عاشقانِ رسولﷺ کی آنکھوں کا سرمہ ہے۔ اس کی گلیوں میں نبیﷺ کے قدموں کے نشان Read more about سفر عشق, قسط ۔ ۲۔۔۔ طارق محمود مرزا[...]

راکھ سے بنی انگلیاں ۔۔۔ صادقہ نواب سحر

بائکلہ کے مصطفیٰ بازار علاقے سے سیدھے چلیں تو اُس سے پہلے ناریل واڑی سُنّی مسلم قبرستان لگتا ہے۔ اس کے آگے رے روڈ ریلوے اسٹیشن کا شروعاتی حصہ جھونپڑیوں اور جھونپڑے نما گھروں کے درمیان چھپا ہوا سا ہے۔ رے روڈ پُل پر دونوں جانب جھونپڑے بنے ہوئے ہیں۔ آگے جا کر دائیں جانب Read more about راکھ سے بنی انگلیاں ۔۔۔ صادقہ نواب سحر[...]

عید سنگت ۔۔۔ سیدہ صائمہ کاظمی

وہ بار بار اسٹیئرنگ پر ہاتھ جماتی، کبھی سڑک پر دور تک کھڑی گاڑیوں کی قطار کو گھورتی، تو کبھی گھڑی کے ہندسوں کو۔ پانچ بج رہے تھے، لیکن ابھی بھی سورج، گویا سوا نیزے پر محسوس ہوتا تھا۔ ٹرن۔۔۔ ٹوں۔۔۔ پوں۔۔۔ پاں۔۔۔۔ عقب سے پھر کچھ گاڑیوں نے شور مچایا تھا۔ بھکاریوں کی نووارد Read more about عید سنگت ۔۔۔ سیدہ صائمہ کاظمی[...]

پی۔ سی۔ ارشد 29965 کی چاند رات ۔۔۔ نیر عابد کاظمی

وہ چھوٹے سے اس کمرے میں زمین پر پیر پسارے بیٹھا تھا۔ اس کا چہرہ بے تاثر مگر پرسکون اور آنکھوں میں بلا کا اطمینان دکھائی دیتا تھا۔ ان مانوس دیواروں پر نگاہ دوڑائی تو اپنے دن بھر کی مصروفیات اس کی نگاہوں میں گھوم گئیں۔۔۔ وہ معروف جسٹس صفدر علی کا گن میں تھا، Read more about پی۔ سی۔ ارشد 29965 کی چاند رات ۔۔۔ نیر عابد کاظمی[...]

جنت کا باغ ۔۔۔ ناہید وحید قریشی

گلی کا موڑ مڑ کر وہ ان آوازوں تک پہنچنا چاہتی تھی جہاں سے ہنسی کا شور بلند ہو کر فضا میں مسکراہٹیں بکھیر رہا تھا۔ اچانک ہی اٹھنے والے بچوں کے قہقہے اس کو بھی ہنسنے پر مجبور کر دیتے تھے اس کے تیز اٹھتے قدم لمحہ بھر کو رکتے، وہ اس شور کی Read more about جنت کا باغ ۔۔۔ ناہید وحید قریشی[...]

دو نظمیں ۔۔۔ مصحف اقبال توصیفی

ایک نظم __________________   (؎ اور تسبیح روز و شب کا دانہ دانہ پھرتا تھا)   رات تھی۔ اندھیرا تھا اپنے خواب سے اُٹھ کر میں نے ایک در کھولا اور میں نے کیا دیکھا؟ دور۔ جو مکاں ہے وہ ہاں۔ یہی مکاں ہے وہ جس میں، میں نہیں رہتا اور مجھے نظر آئے اس Read more about دو نظمیں ۔۔۔ مصحف اقبال توصیفی[...]

دو نظمیں ۔۔۔ تنویر قاضی

  باغوں میں گھرے باغ __________________   خواب نہیں تھے چلغوزے کے باغ تھے جیسے طائر طائر اُڑتے رہتے سپنے سنگِ مر مر کے فوارے بھرے ہوئے نیلے پانی سے ایک لحاف میں بیٹھ کے کھاتے موسم کے پھل خواب نہیں تھے سُرخ گلاب تھے خواب نہیں تھے چلغوزے کے باغ تھے سائیبیرین کُونجیں ساتھ Read more about دو نظمیں ۔۔۔ تنویر قاضی[...]

ایک نظم جو لکھی نہیں جا سکتی ۔۔۔ انجلاء ہمیش

تم خاموش خدا خاموش در و دیوار خاموش یہ بستی جو کبھی زمیں بوس ہو گئی تب آثارِ قدیمہ کے ماہرین کسی بھی ذرّے سے ہماری محبت کا سراغ نہ پا سکیں گی چلو یہ کامیابی تو تمہارے حصے میں آئی مجھے تم نے دکھا دیا کہ قلب کے سناٹے کیسے ہوتے ہیں چیخیں جو Read more about ایک نظم جو لکھی نہیں جا سکتی ۔۔۔ انجلاء ہمیش[...]

نظمیں ۔۔۔ جاناں ملک

  کیا چیزیں واپس ہو سکتی ہیں؟ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔۔ ۔   پیار کی پہلی ایک نظر وہ اس کی حیرت دل کی وہ اک دھڑکن جو پل بھر کو ٹھہر گئی تھی شام اور ڈوبتا Read more about نظمیں ۔۔۔ جاناں ملک[...]

دو نظمیں ۔۔۔ سلیم انصاری

سفر ۔۔ بے چہرگی کا ­____________________________     میرے مالک تازہ سفر کی کون سی یہ منزل ہے جہاں پر میری بیٹی کی آنکھوں میں خواب نہیں اندیشے ہیں میرے بیٹے کے لفظوں میں مستقبل کی دھندلی دھندلی تصویریں ہیں میری بیوی کے چہرے پر مجھ سے بچھڑ جانے کا خوف چمکتا ہے میری نظر Read more about دو نظمیں ۔۔۔ سلیم انصاری[...]

رات ۔۔۔ قیصر شہزاد ساقیؔ

ماں! وہ کالی رات جس کے بعد سویرا نہ ہوا۔۔ ۔۔ جس کے نقش یادوں کے پارہ پارہ وجود سے آج تک نہ مٹ پائے اس رات تقدیر تاریکی کے پیراہن میں تیرے سرہانے کھڑی تھی میں خاموش تماشائی مصلحت کی عینک سے ان ہاتھوں کو جنھوں نے ہزاروں خواہشوں لاکھوں آرزوؤں پر مٹی ڈالی Read more about رات ۔۔۔ قیصر شہزاد ساقیؔ[...]

پرفسور مسعود الحسن۔۔ ایک وہ تھا جو لفظوں میں ادا ہو نہیں سکتا۔۔۔ مظفر حسین سید

اس ایک عمر میں پتہ نہیں کتنے ستم ہائے فلک برداشت کرنے ہیں، کتنے اپنوں کی جدائی کا غم انگیز کرنا ہے۔ عالم یہ ہے کہ ’تو‘ کہنے والے تو کب کے رخصت ہو چکے، اب’ تم‘ کہنے والوں کا بھی فقدان ہے۔ اسی تسلسل حیات و ممات میں ہمارے ایک اور بزرگ، مشفق، استاد Read more about پرفسور مسعود الحسن۔۔ ایک وہ تھا جو لفظوں میں ادا ہو نہیں سکتا۔۔۔ مظفر حسین سید[...]

ساحر شیوی کی دوہا نگاری (قرآن کے تناظر میں) ۔۔۔ ظہیر دانش

دوہے کا مخصوص مزاج، مخصوص آہنگ اور مخصوص انداز ہے۔ دوہا آسانی سے شاعر کی گرفت میں آ نہیں پاتا تا آنکہ شاعر دوہے کے مزاج سے کامل طور پر شناسا نہ ہو جائے، دوہا کہنا سمندر کو کوزے میں سمونے کے مترادف ہے۔ اردو میں بہت سے دوہا نگاروں نے اپنی مخصوص شناخت بنائی Read more about ساحر شیوی کی دوہا نگاری (قرآن کے تناظر میں) ۔۔۔ ظہیر دانش[...]

افتخار راغب ؔ کی غزلوں کا سیاق ۔۔۔ پروفیسر آفتاب احمد آفاقی

معاصر اردو شاعری کی ایک اہم شق اس کا آزادانہ تخلیقی تجربہ ہے جو اپنی تاریخی، تہذیبی، اور ثقافتی اقدار کی باریابی کو ترجیح دیتا ہے۔ اب شعر و ادب کے تعلق سے نئی تھیوری اورلسانی و لسانیاتی بحث و مباحثہ اور صارفی کلچر، کی زائیدہ تمدن جیسے موضوعات ہمارے مطالعے کا حصّہ بن چکے Read more about افتخار راغب ؔ کی غزلوں کا سیاق ۔۔۔ پروفیسر آفتاب احمد آفاقی[...]

محمد اسد اللّٰہ: بحیثیت انشائیہ نگار ۔۔۔ ڈاکٹر اشفاق احمد

ہندوستان میں انشائیہ نگاری کے درخت کی آبیاری کر کے اسے ثمر بار کرنے والے اہل قلم کی تعداد ایک ہاتھ کی انگلیوں پر گنی جا سکتی ہے یوں تو اس صنف کی جانب سے بہت سے اہل قلم نے توجہ کی لیکن ان کی کوششیں دو تین انشائیوں سے آگے نہ بڑھ سکیں۔ اس Read more about محمد اسد اللّٰہ: بحیثیت انشائیہ نگار ۔۔۔ ڈاکٹر اشفاق احمد[...]

مکتوب نگاری کی روایت میں رسائل کا حصہ ۔۔۔ نصرت بخاری

اردو مکتوب نگاری کی روایت کو آگے بڑھانے اور مشاہیر کے خطوط کو محفوظ رکھنے میں رسائل کا ہمیشہ سے کلیدی کردار رہا ہے لیکن میں اُس مدیر کو سلام پیش کرتا ہوں اور اُس کی جودتِ طبع کی داد دیتا ہوں جس نے اردورسائل کی تاریخ میں پہلی بار اپنے رسالے میں کسی کا Read more about مکتوب نگاری کی روایت میں رسائل کا حصہ ۔۔۔ نصرت بخاری[...]

غزلیں ۔۔۔ سلیمان جاذب

الوداع اس طرح کہا میں نے خود سے خود کو جدا کیا میں نے   ماننا دل کا فیصلہ ہے اب کر لیا ہے یہ فیصلہ میں نے   مشکلوں سے جسے قریب کیا عجلتوں میں گنوا دیا میں نے   اتنے نزدیک سے اسے دیکھا درمیاں رکھ کے فاصلہ میں نے   ایک چپ Read more about غزلیں ۔۔۔ سلیمان جاذب[...]

غزل ۔۔۔ اصغرؔ شمیم

دل بہت بے قرار ہوتا ہے جب ترا انتظار ہوتا ہے   اپنے مطلب کے سب ہی بندے ہیں کون اب غم گسار ہوتا ہے   بھیڑ سے جو نکل گیا پہلے وہ بہت ہوشیار ہوتا ہے   جو بگولوں سے کھیلتا ہی رہا اُن میں میرا شمار ہوتا ہے   سب سے ملتا ہے Read more about غزل ۔۔۔ اصغرؔ شمیم[...]

غزلیں ۔۔ نوشین نوشی

مجھ میں تو دکھنے لگا ہے جان من! حسن میرا بڑھ گیا ہے جان من!   کیا کروں یہ عمر چھوٹی پڑ گئی عشق لمبا ہو چلا ہے جان من!   یوں نہ ہو میں پوچھنا ہی چھوڑ دوں مجھ کو دیکھو! کیا ہوا ہے جان من!   تم نہیں ہو کچھ نہیں ہے , Read more about غزلیں ۔۔ نوشین نوشی[...]

غزلیں ۔۔۔ تابش صدیقی

اِلٰہی عَفو و عطا کا تِرے اَحَق ہوں میں خطاؤں پر ہوں میں نادم، عَرَق عَرَق ہوں میں   کسی نے فیض اٹھایا ہے زندگی سے مری کتابِ زیست کا موڑا ہوا وَرَق ہوں میں   یہ تار تار سا دامن، یہ آبلہ پائی بتا رہے ہیں کہ راہی بہ راہِ حق ہوں میں   Read more about غزلیں ۔۔۔ تابش صدیقی[...]

حیدر آباد دکن میں اردو شاعری کا جائزہ: عادل شاہی عہد سے 1960ء تک ۔۔۔ ڈاکٹر عزیز سہیل

مصنفہ: ڈاکٹر ناہیدہ سلطانہ مبصر: ڈاکٹر عزیز سہیل   حیدرآباد دکن کی جامعات سے فارغ اردو ریسرچ اسکالرس کی تحقیقی تخلیقات روز بہ روز ایک کے بعد دیگر منظر عام پر آ رہی ہیں ان میں چند ایک خواتین اسکالر بھی ہیں جنہوں نے اپنے موضوع سے متعلق بہت ہی معیاری اور منفرد تحقیقی کام Read more about حیدر آباد دکن میں اردو شاعری کا جائزہ: عادل شاہی عہد سے 1960ء تک ۔۔۔ ڈاکٹر عزیز سہیل[...]

’اس آباد خرابے میں‘ ایک جائزہ ۔۔۔ گل شبو

ہر انسان اپنی زندگی میں رنج و خوشی اور کرب و طرب سے گزرتا ہے۔ کسی فرد کو اس سے مفر نہیں۔ ہاں کچھ لوگ اسے ’خود نوشت‘ کے طور پر قلم بند کر کے بعد میں آنے والوں کے لیے محفوظ کر دیتے ہیں اور کچھ لوگ موقع بہ موقع زبانی طور پر اپنے Read more about ’اس آباد خرابے میں‘ ایک جائزہ ۔۔۔ گل شبو[...]