غزلیں ۔۔۔ رؤف خلش

  کھلے کھلے سے دریچے مکان میں رکھنا مہکتی بیل چنبیلی کی، لان میں رکھنا   کبھی جو خواب کی تعبیر ڈھونڈنے نکلو زمیں سے اُٹھنا، قدم آسمان میں رکھنا   شگفتگی تو بہت ہے بہار کی رُت میں بدل بھی جاتے ہیں موسم، یہ دھیان میں رکھنا   بجھی سی راہگذر، ملگجے دھوئیں کا Read more about غزلیں ۔۔۔ رؤف خلش[…]

نظمیں ۔۔۔ رؤف خلش

  چوکھٹے میں بولتی تصویر ____________________   خباثت اُس کے چہرے سے کبھی ظاہر نہیں ہوتی کھرچ کر پھینک دی کس نے ہر اک جذبے سے ہے عاری ہمیشہ مسکراہٹ ایک جیسی سبھی کو اُس نے ’’میک اپ‘‘ کی طرح یکسر اُتارا ہے ’’تجارت‘‘ مشغلہ اُس کا ’’مروّت‘‘ اُس کا ایک اوزار ’’محبت‘‘ کو برتتا Read more about نظمیں ۔۔۔ رؤف خلش[…]

مخدوم محی الدین: فن اور شخصیت کے آئینے میں ۔۔۔ رؤف خلش

  مخدوم محی الدین کا نام ایک انقلابی اُردو شاعر اور ایک سیاسی رہنما دونوں حیثیتوں سے ممتاز اور نمایاں ہے۔ اگر صف اوّل کے (۵) ایسے اُردو شعراء کے نام گنوائے جائیں جنھوں نے نظم کو اکائی کا تصور دینے اور علامات و اشاریت سے مالا مال کرنے میں کامیاب اجتہاد کیا ہے تو Read more about مخدوم محی الدین: فن اور شخصیت کے آئینے میں ۔۔۔ رؤف خلش[…]

غزل بیادِٕ علی یاسر ۔۔۔ جلیل عالیؔ

کس رات کوئی ہجر بِتایا نہیں اُس نے کس روز نیا شعر سنایا نہیں اس نے   احباب کو دو روز نہ دی زحمتِ پُرسش احسان کسی کا بھی اٹھایا نہیں اُس نے   طے جادۂ فن کرتا رہا اپنی ہی دھُن میں پیچھے کسی ہم رَو کو ہٹایا نہیں اس نے   ہر دوست Read more about غزل بیادِٕ علی یاسر ۔۔۔ جلیل عالیؔ[…]

علی یاسر کے لیے ایک نظم ۔۔۔ نسرین سید

میں ہوں پردیس میں اور مجھ کو خبر بھی نہ ہوئی علی یاسر تھا، کوئی شخص وطن میں میرے پھول صد رنگ جو لفظوں کے کھلا دیتا تھا جو تھا لبریز تمنا سے محبت سے بھرا وہی، لوگوں کو جو گرویدہ بنا لیتا تھا لوگ جتلاتے ہیں سب اس سے تعلق اپنا میں لکھوں بھی Read more about علی یاسر کے لیے ایک نظم ۔۔۔ نسرین سید[…]

علی یاسر کی یاد میں۔۔۔۔۔۔۔ محمد ظہیر قندیل

ساتھ جیتا رہا علی یاسر اب اکیلا چلا علی یاسر   ’’راہیوں کو نگل گئے رستے‘‘ کون رستہ چنا علی یاسر ’’ مجھے دنیا کی احتیاج نہیں‘‘ سچ ہی تم نے کہا علی یاسر   کیوں کہا ’’میں چلا گیا تو گیا‘‘ کیوں کہا کیوں کہا علی یاسر   جب تری ’’سر زمیں محبت ہے‘‘ Read more about علی یاسر کی یاد میں۔۔۔۔۔۔۔ محمد ظہیر قندیل[…]

گیت کار اجملؔ سلطانپوری ۔۔۔ پروفیسر صالحہ رشید

’کوئی بھی زبان اور اس کا ادب جو ماحول اور معاشرے میں رائج ہو وہ شاعروں ادیبوں اور قلم کاروں کی دین و عطا ہے‘ ۔ یہ قول ہے گیت کار اجمل سلطانپوری کا۔ اتّر پردیش کے ضلع سلطانپور، ریاست کوڑوار کے ہر رکھ پور گاؤں میں مرزا عابد حسین کے گھر ۱۹۲۶؁ء میں ایک Read more about گیت کار اجملؔ سلطانپوری ۔۔۔ پروفیسر صالحہ رشید[…]

اجملؔ سلطان پوری کی سب رنگ شعری جہتیں ۔۔۔ ڈاکٹر محمد حسین مشاہد رضوی

اجملؔ سلطان پوری  (1353ھ –  1935ء /1441ھ – 2020ء) سرزمینِ بھارت کے وہ عظیم نعت گو شاعر اور اہل سنت و جماعت کے ایسے مایۂ ناز نقیب گذرے ہیں جو اکابر علما و مشائخ خصوصاً سیدی مفتی اعظم ہند، حضور محدث اعظم ہند، حضور مجاہد ملت، حضور حافظِ ملت، حضور پاسبانِ ملت علیہم الرحمہ وغیرہم Read more about اجملؔ سلطان پوری کی سب رنگ شعری جہتیں ۔۔۔ ڈاکٹر محمد حسین مشاہد رضوی[…]

نعت ۔۔۔ اجملؔ سلطان پوری

یادِ مدینہ جب آ جائے، وہ بھی اتنی رات گئے دل کیا کیا تڑپے تڑپائے، وہ بھی اتنی رات گئے   نعت نبی کے جھونکے آئے، وہ بھی اتنی رات گئے سانسوں کے سرگم لہرائے، وہ بھی اتنی رات گئے   رات کی اِس ڈھلتی بیلا میں کس نے چھیرا ذکرِ رسول کس نے آئینے Read more about نعت ۔۔۔ اجملؔ سلطان پوری[…]